Jamaat-e-Islami Pakistan |

اہم خبریں

قاضی فائز عیسیٰ سپریم کورٹ کے سینئر جج ہیں ان کے ساتھ حکومت اور ریاست کا رویہ انصاف پر مبنی نہیں ہے،لیاقت بلوچ



لاہور4جون 2020ء
نائب امیر جماعت اسلامی پاکستان لیاقت بلوچ نے کہاہے کہ قومی خزانہ لوٹنے والوں کا ہر قیمت پر کڑا احتساب ہونا چاہیے لیکن وزیراعظم ، وزراء، مشیران بے تدبیر نے احتساب کو مشکوک اور جانبدارانہ بنادیاہے ۔ اپوزیشن لیڈر میاں شہبازشریف کی گرفتاری کے لیے نیب نے اپنے وجود کے لیے کئی سوالات کھڑے کردیے ہیں ۔ قاضی فائز عیسیٰ سپریم کورٹ کے سینئر جج ہیں ان کے ساتھ حکومت اور ریاست کا رویہ انصاف پر مبنی نہیں ہے ۔ حکومت مشکوک اور مخصوص خواہشات پر مبنی ریفرنس واپس لے ۔ پٹرول کی قیمتوں میں ریکارڈ کمی کے باوجود عوام کو کوئی ریلیف نہیں ملا ۔ شوگر سبسڈی دے کر عوام کی جیبوں پر اربوں کا ڈاکہ مارا گیا ۔ پٹرول کی قیمتیں کم ہونے کے بعد پھر مہنگائی کے ذریعے عوام پر اربوں کا ڈاکہ پڑ گیا ۔ تیل کی فراہمی نہ ہونے سے عوام پورے ملک میں رل گئے ۔ عملاً پورے ملک میں وفاق اور صوبوں کی رٹ نہیں ، عوام لوٹ مار کے مافیا کے رحم و کرم پر ہیں ۔ بائیس ماہ میں عمران خان حکومت نے عوام ، خواتین اور خصوصاً نوجوانوں کو مایوس کردیاہے ۔ ان خیالات کا اظہار انہوںنے لاہور میں وفود سے ملاقات اور صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔
لیاقت بلوچ نے کہاکہ کرونا وائرس سے 1729 افراد موت کے منہ میں چلے گئے ۔ پارلیمنٹ اور صوبائی اسمبلی کے ممبران جاں بحق ہوگئے ہیں، سب اموات صدمہ کا باعث ہیں ۔ پورے ملک میں کرونا کو منظم طریقے سے پھیلا دیا گیا ہے ۔ وفاق اور صوبے ایک پیج پر نہیں ۔ لاک ڈاﺅن اور کاروبار بندش پر ایک پالیسی نہیں ۔ جلد بازی میں لاک ڈاﺅن اور مزیدبے تدبیری سے لاک ڈاﺅن کا خاتمہ کرونا وبا میں اضافہ کا باعث بن گیاہے ۔ انہوںنے کہاکہ وزیراعظم کرونا وبا ، اقتصادی بحران سے نمٹنے کے لیے قومی قیادت کے تعاون سے قومی حکمت عملی بنائیں وگرنہ ہر میدان کا زوال جمہوریت و پارلیمانی نظام کے لیے جان لیوابن جائے گا ۔
 

Youtube Downloader id

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں




سوشل میڈیا لنکس